Abbas Ka Matam Wafadar Ka Matam

بھائی کی اطاعت سے کبھی سر نہ اٹھایا
اُس عاشق شبیرؑ دل افگار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

پانی نہ پیا نہر پہ شانے بھی کاتایی
ہر رخ سے ہوا جعفرِ طیارؑ کا ماتم

سینے پہ سِنا کھا كے ہوا اکبرِؑ مہرو
کرنا نہ ملا بانو کو دلدار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

جب لاشائے حُر آیا تو زینبؑ یہ پُکاری
لو آ كے کرو شہہ كے طرفدار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

آئے تھے مدینے سے رہے کرب بلا میں
شبیرؑ غریب الوطن بے یار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

وعدہ کیا اِک سر کا بہتر دیئے فدیہ
سردار جناں صادق و دلدار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

خیمہ جلا زیور لٹا دَر دَر پھری ماری
قطرہ نہ ملا بانو كے دلدار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

بازو پہ رسن بال کُھلے شام کا دربار
زینبؑ نے کیا یوں رقم دلدار کا ماتم

خیمے سے نکل آئی بہن بھائی كے غم میں
کرتی ہوئی عباسِؑ علمدار کا ماتم
عباسؑ کا ماتم ہے وفادار کا ماتم

 

368 Views
Abbas Ka Matam Wafadar Ka Matam

Scan this QR code to view these lyrics on your mobile devices.

More
Lyrics

More Nohay Lyrics Available On The APP

Screenshot